13

بریکنگ نیوز: 450 ارب روپے دینا بھی کسی کام نہ آیا۔۔۔ بحریہ ٹاون کے مالک” ملک ریاض” تو لٹ گئے، اچانک ایسا کام ہوگیا کہ پوری زندگی کی محنت پر پانی پھر گیا


لاہور (ویب ڈیسک) بحریہ ٹاون کے بانی ملک ریاض کی مشکلات رفتہ رفتہ بڑھنے لگیں، نیب راولپنڈی نے پراپرٹی ٹائیکون کے خلاف دوسرا کرپشن ریفرنس تیارکرلیا۔قومی احتساب بیورونے بحریہ ٹاؤن کے بانی ملک ریاض کے خلاف بحریہ گالف سٹی مری کیس میں ریفرنس تیارکیا ہے جسے منظوری کیلئے چیئرمین نیب کو بھیج

دیا گیا۔چیئرمین نیب جاوید اقبال کی منظوری کے بعد ریفرنس احتساب عدالت میں دائر کیا جائے گا، ریفرنس میں ملک ریاض اور علی ملک کو ملزم نامزد کیا گیا۔دونوں پرشاملات کے رقبے پر قبضہ کرکے بحریہ گالف سٹی منصوبہ بنانے اورخلاف قانون زمین کی الاٹمنٹ کا الزام ہے۔نیب راولپنڈی پراپرٹی ٹائیکون ملک ریاض کے خلاف تخت پڑی کیس میں پہلے ہی ایک ریفرنس دائرکرچکا ہے، یاد رہے کہ اس سے قبل خبر یہ تھی کہ بحریہ ٹاؤن نے اپنے کراچی کے منصوبے کے لیے 440 ارب سے بڑھا کر 450 ارب روپے کی پیشکش کرتے ہوئے نیب سے مقدمات ختم کرنے کی استدعا کردی جس پر سپریم کورٹ نے فیصلہ محفوظ کرلیا جو 21 مارچ کو سنایا جائے گا۔سپریم کورٹ آف پاکستان میں جسٹس عظمت سعید شیخ کی زیر سربراہی بحریہ ٹاؤن عملدرآمد کیس کی سماعت ہوئی جس میں بحریہ ٹاؤن نے گزشتہ روز کراچی منصوبے کے لیے کی گئی 440 ارب روپے کی پیشکش بڑھا کر 450ارب روپے کردی۔بحریہ ٹاؤن کے وکیل نے عدالت کو رقم کی ادائیگی کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ پانچ سال تک 2.25ارب روہے ماہانہ ادا کیے جائیں گے جس کے بعد بقیہ رقم کی ادائیگی 3 سال میں کی جائے گی۔وکیل نے نیب کیسز ختم کرنے کی درخواست کرنے کے ساتھ ساتھ زمین منتقلی کی فیس اور ٹیکس استثنیٰ کی بھی استدعا کی۔انہوں نے کہا کہ 20 ارب روپے کی ڈاؤن پیمنٹ جبکہ اقساط کا 30 فیصد بھی جمع کراتے رہیں گے اور گارنٹی کے طور پر چڑیا گھر، پارکس اور سینیما پیش کریں گے۔



Source link