23

ماڈلنگ کے چکر میں لاہور آنے والی نوجوان لڑکی کی موت کیسے ہوئی اور وہ تین لڑکوں کے ساتھ مل کر کیا شرمناک کام کر رہی تھی ؟تحقیقات میں انکشاف


لاہور (ویب ڈیسک )کراچی سے ماڈلنگ کے شوق میں لاہور آنے والی نوجوان لڑکی کی پراسرار مو ت کا معمہ حل ہو گیاہے اور پوسٹ مارٹم میں موت کی وجہ بھی سامنے آ گئی ہے ۔تفصیلات کے مطابق پولیس کو ماڈل اقراسعید کے فون میں سے اہل معلومات مل گئیں ہیں جس سے پتا

چلتاہے کہ اقرادراصل حسن ، عثمان اور عمر کے ساتھ رابطے میں تھی ۔ پولیس کا کہناہے کہ تینوں لڑکے گلشن راوی کے رہائشی ہیں اور لڑکی نے تینوں لڑکوں کے ساتھ مل کر آئس کا نشہ کیا تاہم نشے کے باعث لڑکی کی حالت خراب ہو گئی اور وہ اسے ہسپتال میں چھوڑ کر فرار ہو گئے ۔پولیس کا کہناہے کہ لڑکی کی موت نشے کی زیادتی کے باعث ہوئی ہے تاہم عثمان ، حسن اور عمر کیخلاف مقدمہ درج کر لیا گیاہے جبکہ مقدمے میں نامزد تینوں ملزمان نے عبوری ضمانتیں حاصل کر لی ہیں تاہم لڑکی سے زیادتی کا پوسٹ مارٹم کے بعد ہی واضح ہو سکے گا ۔ واضح رہے ماڈلنگ کے شوق میں کراچی سے پنجاب کے دارالحکومت لاہور جانے والی نوجوان لڑکی کو قتل کردیا گیا، ماڈل کی لاش اسپتال میں چھوڑ کر فرار ہونے والے 3 لڑکوں کے خلاف پولیس نے مقدمہ درج کرلیا۔ تفصیلات کے مطابق کراچی سے ماڈلنگ کے لیے لاہور آنے والی 22 سالہ لڑکی کو قتل کردیا گیا، مقتولہ کی شناخت اقرا سعید کے نام سے ہوئی ہے، لڑکی کو اسپتال چھوڑ کر فرار ہونے والے 3 لڑکوں کے خلاف مقدمہ درج کرکے تحقیقات کا آغاز کردیا گیا ہے۔ پولیس حکام کے مطابق لڑکی کی لاش دو دن پہلے شاہدرہ کے علاقے سے ملی، سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے ملزمان کی حسن، عمر اور عثمان کے ناموں سے شناخت ہوئی۔ مقتولہ کے والدین کا کہنا ہے کہ اقرا ناراض ہو کر گھر چھوڑ کر چلی گئی تھی۔



Source link