10

معیشت کی طرح پولیو پروگرام کا بھی بیڑا غرق، لیگی خاتون رہنما پھٹ پڑی


اسلام آباد(ویب ڈیسک)سابق وفاقی وزیر صحت اور پاکستان مسلم لیگ ن کی سینئر رہنما سائرہ افضل تارڑ نے کہا ہے کہ بدقسمتی سے آج پاکستان میں پولیو پروگرام انتشار کا شکار ہے،موجودہ دور حکومت میں پاکستانی معیشت کی طرح پولیوپروگرام کابھی بیڑاغرق ہوگیا ہے،حکومتی سطح پرپولیومہم اورصحت وتعلیم کابیڑہ غرق کردیاگیا،پولیو کا مرض اشتہاروں ،سوشل میڈیا اورٹوئٹر پر

ختم نہیں ہوگا،حکومت پولیواورڈینگی پربھی کمیشن بنائےاورذمہ داروں کاتعین کرے۔نجی ٹی وی کے مطابق مریم اورنگزیب کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیرصحت سائرہ افضل تارڑکاکہناتھاکہملک میں پولیواورڈینگی کی تشویش ناک صورت حال ہے،ہمارےدورےمیں بھی پولیووائرس تھا،جن علاقوں میں پولیو کیسز تھے وہاں جانا بھی ناممکن تھا لیکن ہم نےاس کومحدودرکھا،ہم اپنےدورمیں پولیو پروگرام میں شفافیت لائے،ہمارے دور میں بلوچستان میں تین کیسز تھے،ہمارےدور میں پنجاب پولیو فری تھا،وزیراعظم سےگزارش ہےپولیوکیلئےکوئی اہل بندہ لگایاجائے۔انہوں نے کہا کہ ٹیکنیکل ایڈوائزری گروپ کی رپورٹ حکومت کے منہ پہ طمانچہ ہے،پولیو پروگرام اکیلی وفاقی حکومت فوکل پرسن یاوزیرصحت نہیں چلاتے یہ پوری دنیا کےپارٹنرز ہیں،ہم اس پروگرام میں شفافیت لائے ، ہم نےپارٹنرز کو آن بورڈ لیا،بد قسمتی سے آج پاکستان میں پولیو پروگرام انتشار کا شکار ہے،پاکستان کے بچوں میں پولیو ٹوئٹر اور سوشل میڈیا پہ باتیں کرنے سے ختم نہیں ہوگا،جب کوئی اکیلے جہاز لیکر اڑے گا تو وہ نیچے گرےگا، اس وقت 65پولیو کے کیسز ہیں ،پاکستانی معیشت کی طرح پولیوپروگرام کابھی بیڑاغرق ہوگیاہے،وزیراعظم کوہرچیزکاٹی وی سے پتہ چلتا ہے،اس نااہل حکومت کوپورا ایک سال دیا ، کیا اس طرح کے لوگوں سے امید رکھ سکتےہیں؟اپریل2019کےبعدگھرگھرایک بھی مہم شروع نہیں کی جاسکی،اس حوالےسےوفاق اورصوبائی حکومتوں کاآپس میں کوئی رابطہ نہیں، کے پی کےبعدبلوچستان میں پولیوکےبڑھتےکیسزخطرےکی گھنٹی ہے،امیدہےوزیراعظم ہماری بات کا نوٹس لیں گے ۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق قائم مقام گورنر پنجاب چودھری پرویزالٰہی نے ملک اسد کھوکھر سے صوبائی وزارت کا حلف لے لیاہے۔ پنجاب کابینہ میں ایک بار پھر سے توسیع کرتے ہوئے ملک اسد کھوکھر کو وزارت کا قلمدان سونپ دیا گیا ہے،گورنر ہاؤس میں منعقدہ حلف برداری کی تقریب صوبائی وزراء میاں اسلم اقبال، نعمان لنگڑیال، میاں محمود الرشید، سردار آصف نکئی، پیر سعید الحسن، حافظ عمار یاسر، ارکان اسمبلی، چیف سیکرٹری یوسف نسیم کھوکھر اور اعلیٰ صوبائی افسروں نے بھی شرکت کی۔واضح رہے کہ حکومت پنجاب نے کابینہ میں توسیع کا فیصلہ کرتے ہوئے تحریک انصاف کی ٹکٹ پر لاہور سے منتخب ہونے والے ممبر پنجاب اسمبلی ملک محمد اسد کھوکھر کو وزیر بنانے کا فیصلہ کیا ہے تاہم انہیں کون سی وزارت کا قلمدان سونپا جائے گا اس بارے میں کچھ معلوم نہیں ہو سکا ۔یاد رہے کہ اسد کھوکھر وزیر اعلیٰ پنجاب شکایت سیل کے چئیرمین کے طور پر بھی کام کرتے رہےتاہم گذشتہ ماہ اسد کھوکھر نے اختلافات کے باعث چیئرمین وزیر اعلیٰ پنجاب شکایت سیل کا عہدہ چھوڑ دیا تھا۔



Source link