15

’’طویل تحقیق کے بعد مکمل فارمولا تیار کر لیا گیا، اگلے سال کشمیر کا کتنا حصہ آزادکروا لیا جائے گا اور کیسے؟؟ ‘‘بڑی خوشخبری سنا دی گئی


لاہور (ویب ڈیسک) وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہاہے کہ آئندہ یوم آزاد ی کشمیر ی ہمارے ساتھ منائیں گے ،پنجاب کے ہر ضلع میں ایک شاہراہ کو کشمیر سے منسوب کیا جائے گا ، نو پارکس کشمیر سے منسوب کئے جائیں گے ۔چیئر نگ کراس پر کشمیریوں سے اظہار یکجہتی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا کہ آئندہ یوم آزادی کشمیر ی ہمارے ساتھ منائیں گے ،پنجاب کے ہر ضلع میں ایک شاہراہ کو کشمیر سے منسوب کیا جائے گا ، نو پارکس کشمیر سے منسوب کئے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا نوٹس لے، وزیر اعظم کی ہدایت پرآج ملک بھر میں ”یوم سیاہ “منایا جارہاہے۔عثمان بزدار نے اس موقع پر ”کشمیر بنے کا پاکستان“کے نعرے بھی لگائے اور کہا کہ ہر ہفتے احتجاجی ریلی نکالنے کا سلسلہ جاری رہے گا ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کشمیریوں کی اخلاقی اور سفارتی امداد ہر صورت جاری رکھے گا۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاہے کہ پوری دنیا کی نظریں سلامتی کونسل پر ہیں، دنیا کو مقبوضہ کشمیر کے معاملے پر کردار ادا کرناہوگا، ہم سفارتی ، قانونی اور اخلاقی محاذ پر مقابلہ کریں گے اور کشمیریوں کا آخری حد تک ساتھ دیں گے ۔تفصیلات کے مطابق چیئر کراسنگ مال روڈ پر ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ دنیا کو مقبوضہ کشمیر کے معاملے پر کردار ادا کرناہوگا ، اس وقت خطے کا امن داﺅ پر لگادیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میں نے امریکہ سے کہہ دیا تھا کہ وزیر اعظم اور پاکستان کے عوام افغانستان کا امن دیکھنا چاہتے ہیں لیکن ہمیں لگتاہے کہ اس کیخلاف کوئی سازش ہورہی ہے اور میں نے اس پر سفارتی سطح پر احتجاج ریکارڈ کروایا ۔وزیر خارجہ نے کہا کہ آج لاہور اور لندن میں حق کی آواز بلند کی جارہی ،

پاکستان نے فیصلہ کیاہے کہ ہم سفارتی ، قانونی اور اخلاقی محاذ پر مقابلہ کریں گے اور کشمیریوں کا آخری حد تک ساتھ دیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ نہتے کشمیر ی پاکستان اور عالمی برادری کی طرف دیکھ رہے ہیں، کشمیر کا مقدمہ اقوام متحدہ اور سلامتی کونسل تک پہنچا دیا ہے۔ ان کا کہناتھا کہ کشمیر کی تمام قیادت پابند سلاسل ہے اور کرفیوکو آج گیارواں روز ہے۔ آج پوری قوم کا پیغام ہے کہ” کشمیر بنے گا پاکستان “، حکومت ہر فورم پر کشمیریوں کاساتھ دیگی، مودی سرکار نے چال چلی ، آج سیاست نہیں کشمیر کاز کا وقت ہے ۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ پوری دنیا کی نظریں سلامتی کونسل پر ہیں ۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ہم کشمیریوں کا آخری حد تک ساتھ دیں گے، اللہ تعالیٰ نے عمران خان اور حکومت کو کشمیریوں کا مقدمہ لڑنے کا موقع دیا ہے، سلامتی کونسل کوخون خرابے سے قبل اپنا کردارادا کرنا ہوگا۔ انہوں نے لاہور میں یوم سیاہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دنیا دیکھ رہی ہے کہ 11واں دن ہے اورکشمیر میں کرفیو نافذ ہے، کھانا دستیاب نہیں، ادویات میسر نہیں، تمام قیادت پابند سلاسل ہے۔کشمیراور ریاست کومٹانے کیلئے مودی نے جوچال ہے اس کو کشمیری قوم نے مسترد کردیا ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ساری قوم کو کشمیریوں کو یکجا ہونا چاہیے۔ پاکستانی کی تمام سیاسی قیادت کو کشمیر کاز کیلئے متحد ہوجانا چاہیے، یہ سیاست کا وقت نہیں ہے۔کشمیر وادی، لداخ مصر بن چکا ہے، سب کی نگاہیں پاکستان اور دنیا کی طرف لگی ہوئی ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آج کشمیریوں کا مقدمہ عالمی سطح پر پہنچ چکا ہے، اس سے پہلے خون خرابا ہو، سلامتی کونسل کو اپنا کردارادا کرنا ہوگا۔پاکستان کی توجہ افغانستان اور امن کی طرف تھی ، پانچ اگست کو جب زملے خلیل آئے توان سے کہا تھا کہ کشمیر سے متعلق بہت بڑی سازش ہورہی ہے۔ پاکستان سمیت لندن میں بھی یوم سیاہ منایا جارہا ہے۔ہم کشمیریوں کی آخری حد تک ساتھ دیں گے۔اللہ تعالیٰ نے عمران خان اور حکومت کو موقع دیا ہے کہ وہ کشمیریوں کا دنیا میں مقدمہ لڑے۔ اس موقع پرمقبوضہ کشمیر میں حریت رہنماء یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک نے کہا کہ آپ کے جوش وجذبے سے کشمیریوں کو طاقت ملی۔یہ سیاست نہیں جہاد ہے اس کی طاقت ایمان سے ملتی ہے۔ مشعال ملک نے کہا کہ آپ لوگوں نے بہن کا ساتھ دینے میں بہت دیر کردی۔ کشمیریوں پر ظلم کے پہاڑ گرائے جا رہے ہیں۔ نہتے عوام بھارتی فوج کا مقابلہ کررہے ہیں،مظلوم کشمیری بھارتی ظلم کے سامنے سینہ سپر ہیں۔



Source link