26

شادی کس سے کرنی ہے؟ بالاخر مہوش حیات نے خاموشی توڑ دی، مداحوں کے کام کا اعلان کر دیا



لاہور (ویب ڈیسک) پاکستانی فلم انڈسٹری کی خوبرو اداکارہ مہوش حیات نے شادی کے لیےلڑکے کی پسند بتادی، اداکارہ مہوش حیات نے انٹرویو میں بتایا کہ انہیں شادی کی فی الحال کوئی جلدی نہیں تاہم شادی کے لیے اُنہیں ایسا لڑکا پسند آئے گا جسے اُن کے کام سے کوئی مسئلہ نہ ہو ،

انہوں نے کہا کہ انہیں بلاول بھٹو نہیں بلکہ عمران خان پسند ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق اداکارہ مہوش حیات نے انٹرویو میں بتایا کہ انہیں شادی کی فی الحال کوئی جلدی نہیں تاہم شادی کے لیے اُنہیں ایسا لڑکا پسند آئے گا جسے اُن کے کام سے کوئی مسئلہ نہ ہو جبکہ سیاسی خیالات کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ انہیں بلاول بھٹو نہیں بلکہ عمران خان پسند ہیں۔اداکارہ مہوش حیات کا مزید کہنا تھا کہ وہ اپنےفلمی کریئر سے بہت محبت کرتی ہیں اور اُسی سے شادی کر چکی ہیں۔ اُن کا یہ بھی کہنا تھا کہ ابھی بہت کام ہیں جو میں کرنا چاہتی ہوں اور اپنی زندگی میں بہت کچھ حاصل کرنا چاہتی ہوں۔واضح رہے مہوش حیات نے2010 میں ٹی وی سیریل ’من جلی‘ سے کیریئر کا آغاز کیا جبکہ 2014 میں فلم ’نامعلوم افراد‘ میں اسپیشل پرفارمنس دیکر فلمی دنیا میں قدم رکھا اس کے بعد جوانی پھر نہیں آنی، ایکٹر ان لا،پنجاب نہیں جاونگی اور لوڈ ویڈنگ جیسی ہٹ فلمیں کیں۔یاد رہے مہوش حیات کو شاندار خدمات پر حال ہی میں سول اعزاز تمغہ امتیاز سے نوازا گیا ہے ، شاندار اداکاری کے باعث مہوش حیات کی کامیابیوں کا سفر ابھی جاری ہے، یاد رہے کہ اس ے قبل بھی یہ خبر تھی کہ مہوش حیات کو یومِ پاکستان کے موقع پر ایوان صدر میں ’تمغہ امتیاز‘ کے اعزاز سے نوازا گیا جس پر انہیں کافی سراہا گیا جب کہ مختلف حلقوں کی جانب سے شدید تنقید بھی کی جارہی ہے جس پر اداکارہ نے

ردِ عمل کا اظہار کیا ہے۔اداکارہ کو سب سے بڑے سول ایوارڈ ’تمغہ امتیاز‘ سے پاکستانی فلم انڈسٹری میں نمایاں کارکردگی دکھانے پر نوازا گیا جس پر تنقید کرنے والوں کا ماننا ہے کہ مہوش حیات اس کی حقدار نہیں، اس اعزاز کی توہین کی گئی ہے کیونکہ یہ ان افراد کے لیے ہے جو ملک کے لیے لازوال خدمات انجام دیتے ہیں۔سوشل میڈیا پر اداکارہ ’تمغہ امتیاز‘ کی حقدار ہیں یا نہیں یہ بحث اس وقت ہی شروع ہوگئی تھی جب ان کا نام اس اعزاز کے لیے منتخب کیا گیا۔ایسے میں ایک ویب سائٹ کی جانب سے یہ بھی تاثر دینے کی کوشش دی گئی تھی کہ اداکارہ کو یہ اعزاز ذاتی حیثیت کی بناء پر دیا جا رہا ہے جس پر مہوش حیات نے ٹوئٹر پر کرارا جواب دیتے ہوئے کہا تھا کہ شرم آنی چاہیے۔بعدازاں جب انہوں نے یومِ پاکستان کی تقریب میں ’تمغہ امتیاز‘ کا اعزاز حاصل کرلیا تو ان کی جانب سے والدہ کے ساتھ لی گئی ایک تصویر سوشل میڈیا پر شیئر کی گئی جس میں انہوں نے فخر محسوس کرتے ہوئے اپنے جذبات کا برملا اظہار کیا اور ایوارڈ کو ملک کی تمام محنت کش خواتین کے نام کیا۔لیکن تنقید کا سلسلہ یہاں تھما نہیں بلکہ سوشل میڈیا پر تبصروں میں بہت سے ناقدین نے نازیبا الفاظ کا استعمال کیا جس پر اداکارہ نے ٹوئٹر پیغام میں خاموشی توڑتے ہوئے اپنا بھرپور رد عمل دیا۔اداکارہ نے سلسلہ وار تین ٹوئٹس کرتے ہوئے لکھا کہ ’ہر کوئی اپنی رائے کا حق رکھتا ہے چاہے وہ یہ سمجھے کہ میں اس اعزاز کی حقدار ہوں یا نہیں، میں اس کا احترام کرتی ہوں لیکن میں اجازت نہیں دیتی کہ کوئی میرے کردار پر انگلی اٹھائے‘۔





Source link