14

جلد وہ وقت آںیوالا ہے جب عمران حکومت کو ٹیکس اکٹھا کرنے کے لیے فوج سے مدد لینا پڑے گی ، اس برے وقت سے بچنے کا ایک ہی طریقہ ہے ۔۔۔۔۔ جاوید چوہدری نے عمران خان کے کام کی بات کہہ ڈالی



لاہور (ویب ڈیسک ) معیشت روز بہ روز بیٹھتی جا رہی ہے اور عام آدمی کی زندگی میں مہنگائی کا طوفان آتا جا رہا ہے۔غربت اور بے روز گاری میں اضافے کے ساتھ ساتھ کئی ادارے بھی قرضوں کے بوجھ میں ڈوبتے چلے جا رہے ہیں۔جس دن سے موجودہ حکومت نے کرسی

سنبھالی اسی دن سے ڈالر پکڑائی نہیں دے رہااور آئے دن اونچی ہوا میں اڑتا جا رہا ہے۔ اپوزیشن اور حکومت کی آپس میں نوک جھونک کی وجہ سے بھی کئی معاملات کھٹائی میں پڑتے جا رہے ہیں۔سرمایہ کار اپنا سرمایہ سٹاک مارکیٹ سے نکالنے کو ترجیح دے رہے ہیں اور کئی ترقیاتی پراجیکٹ بھی تعطل کا شکار ہیں۔ ایسے دکھائی دیتا ہے کہ حکومت کے ہاتھ پاﺅں پھولے ہوئے ہیں اور اسے سجھائی نہیں دیتا کہ وہ کیا کرے اور کیا نہ کرے۔ اسی چیز کو مدنظر کھتے ہوئے سینئر صحافی جاوید چودھری نے اپنے کالم میں وزیر اعظم عمران خان کو ایسامشورہ دے ڈالا کہ جس سے ملکی معیشت دنوں میں بہتر ہو جائے گی۔ جاوید چودھری کا کہنا تھا کہ حکومت نے احتساب کے نعرے کو سچ ثابت کرنے کے لیے خواہ مخواہ اپوزیشن کے پیچھے ہی سارا زور لگا رکھا ہے۔حکومت خود بیان بازی کے بجائے کرپشن اور منی لانڈرنگ کے کیسز میں اداروں کو خود مختار کرتے ہوئے انہیں اپنا کام کرنے دیں ارو یہ دو قدم آگے بڑھائیں اور زرداری اور شہباز شریف کو گلے لگا لیں۔جس دن انہوں نے ایسا کیا اس دن سٹاک مارکیٹ کی مندی ختم ہو جائے گی اور سرمایہ کار دوڑتاا آئے گا۔ سینئر صحافی جاوید چودھری کا کہنا تھا کہ عالمی سازش کے تحت ہی حکومت کونان ایشوز میں الجھا کر رکھا جا رہا ہے۔اگر یہی صورتحال رہی تو بہت جلد معیشت ڈوب جائے گی اورسرکاری تنخواہیں دینے کے لیے حکومت کے پا س پیسے نہیں ہوںگے اور وہ ٹیکس کولیکشن فوج کو دیں گے۔





Source link