19

معاملات طے ۔۔۔ نواز شریف کی بات بنتے ہی سلیم صافی عمران خان کو پیارے ہوگئے – Hassan Nisar Official Urdu News Website


اسلام آباد(نیوز ڈیسک) تجزیہ کار سلیم صافی نے کہاہے کہ مولانا فضل الرحمان سے نواز شریف نے معذرت کی ہے تو یہ حکومت کیلئے خطرے کی بات ہے کیونکہ نواز شریف کا فضل الرحمان سے تحریک میں شرکت سے معذرت کرنے کا مطلب یہ ہے کہ نواز شریف کی بات بنتی جارہی

ہے ، عمران خان کی بھارت کے حوالے سے پر امیدی پر میں ان سے اتفاق کرتا ہوں ۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سلیم صافی نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے تعلقات کے حوالے سے کوئی حتمی رائے قائم نہیں کی جاسکتی لیکن تاریخی طور پر دیکھا جائے توبھارت میں جو قیادت شدت پسند سمجھی جاتی تھی ، اس نے پاک بھارت تعلقات کے حوالے سے ڈلیور کیاہے ، کانگریس نے کبھی بھی کوئی ایسا کام نہیں کیاہے جس کا پاکستان کوفائدہ اور انڈیا کو نقصان ہوا ہو ، کانگریس نے سب سے بڑا نقصان مشرقی پاکستان کوتوڑنے کا پاکستان کو پہنچایا ۔ان کا کہنا تھا کہ مود ی کبھی ایک انتہاءپر جاتے تھے اور کبھی دوسری انتہاءپر لیکن ایک دن خود ہی چل کر نواز شریف کے پاس آگئے ، اس معاملے پر میں عمران خان کی پر امیدی سے اتفاق کرتا ہوں۔انہوں نے کہا کہ اگر مولانا فضل الرحمان سے نواز شریف نے معذرت کی ہے تو یہ حکومت کیلئے خطرے کی بات ہے کیونکہ نواز شریف کا فضل الرحمان سے تحریک میں شرکت سے معذرت کرنے کا مطلب یہ ہے کہ نواز شریف کی بات بنتی جارہی ہے جوحکومت کے لئے خطرے کی بات ہے ۔ پروگرام میں شریک سینئر صحافی حسن نثار نے کہا کہ عمران خان نے بی جے پی کے حوالے سے جوبات کی ہے ، اس کا وقت بہت درست ہے ، جس طرح سے انڈیا میں اس پر ردعمل کا اظہار کیا گیا ہے ، اس سے پتہ چلتاہے کہ اس بیان کا وقت بہت درست ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ انتہاپسندانہ نظریے کا حامل کوئی گروپ یا پارٹی کسی وقت بھی کسی انتہاءپر جاسکتی ہے لیکن بھارت میں کانگریس سٹیٹس کو کوبرقرار رکھے گی ۔انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان تحریک تو کیا چلا پائیں گے لیکن اصل سوال تو یہ ہے کہ یہ خود کوبھی بچا پائیں گے یا نہیں، اس کا جواب آنے والے دنوں میں مل جائے گا ، یہ سیاسی طور پر خود کو زندہ رکھنے کیلئے پھڑ پھڑا رہے ہیں ، ان کی یہ سرگرمیاں مکمل طور پر بے کار ہیں۔





Source link