27

پولیس ماڈل اقرا سعید کاموبائل فون ان لاک کرنےمیں کامیاب، موت کی وجہ سامنے آگئی


لاہور : کراچی سے ماڈلنگ کے شوق میں لاہور آنے والی لڑکی کی پراسرار ہلاکت پر پولیس نے اقرا سعید کاموبائل فون ان لاک کرلیا اور بتایا اقرا کی موت آئس نشے کی زیادتی سے ہوئی جبکہ لڑکی کے تین دوستوں کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی سے ماڈلنگ کے لیے لاہور آنے والی 22 سالہ لڑکی کے قتل کیس میں اہم پیش رفت سامنے آئی ، پولیس ماڈل اقراء سعید کا موبائل فون ان لاک کرنے میں کامیاب ہوگئی ، جس کے بعد موبائل فون سے اہم انکشافات سامنے آئے۔

پولیس کا کہنا ہے اقراء سعید لاہور میں حسن بٹ ، عثمان اور عمر نامی افراد کے ساتھ رابطے میں تھی ، تینوں نوجوان گلشن راوی کے رہائشی ہیں، اقراء سعید نے تینوں نوجوانوں کے ساتھ آئس کا نشہ کیا، طبعیت خراب ہونے پر تینوں نوجوان اقراء سعید کو ہسپتال چھوڑ کر فرار ہوگئے۔

پولیس نے انکشاف کیا اقراء کی موت نشے کی زیادتی کے باعث ہوئی۔

پولیس کے مطابق موبائل فون سے ملنے والی معلومات پر عثمان ، حسن اور عمر کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ، مقدمہ میں نامزد ملزمان نے عبوری ضمانتیں کروالیں ہیں، اقراء سعید کے ساتھ زیادتی کے بارے میں حتمی رائے پوسمارٹم رپورٹ سے ہوگی۔

مزید پڑھیں : کراچی سے ماڈلنگ کے لیے لاہور آنے والی لڑکی قتل

یاد رہے تین روز پہلے تین نوجوان بائیس سالہ لڑکی کو بے ہوشی کی حالت میں شاہدرہ کے اسپتال میں چھوڑگئے تھے، لڑکی جانبر نہ ہوئی تو اسپتال انتظامیہ نے پولیس کو اطلاع کر دی۔

پولیس نے لاش پوسٹمارٹم کے لئے مردہ خانے منتقل کر کے ملزموں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا تھا، پولیس حکام نے بتایا لڑکی کی شناخت اقرا سعید کے نام سے ہوئی، جو ماڈلنگ کے لیے کراچی سے لاہورآئی تھی، شبہ ہے لڑکی کو نشہ آور چیز دی گئی۔

لڑکی کے گھروالوں کا کہنا ہے اقرا ناراض ہوکر گھر سے نکلی تھی۔

Comments

comments





Source link