13

سپریم کورٹ آف پاکستان سے ملزم فرار ، پولیس والے کھڑے تماشا دیکھتے رہے ، مگر کون تھا اور اسکے خلاف کیا شرمناک کیس چل رہا تھا ؟ – Hassan Nisar Official Urdu News Website


کراچی (ویب ڈیسک )سپریم کورٹ نے 12 سالہ ہندو لڑکی کے ساتھ زیادتی کے الزام میں ملزم کی ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست مستر د کر دی ہے جس کے بعد ملزم عدالت سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا ۔تفصیلات کے مطابق سندھ کے علاقے عمر کوٹ میں 14 فروری 2019

کو 12 سالہ بچی کے ساتھ جنسی زیادتی کا واقعہ اس وقت پیش آیا جب وہ کھیت میں سے مرچیں چن رہی تھی ۔ سرکاری وکیل نے سپریم کورٹ میں دلائل دیتے ہوئے کہا کہ ملزم سلیم نے دیگر ملزمان کی موجودگی میں بارہ سالہ بچی کے ساتھ زیادتی کی ۔ سرکاری وکیل نے عدالت سے استدعاکی کہ ملزم رعایت کا مستحق نہیں ہے اس لیے ضمانت مسترد کی جائے۔ سپریم کورٹ نے مرکزی ملزم سلیم کی ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست مسترد کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ ملزم کو ٹرائل کورٹ کا سامنا کرنا پڑے گا۔ عدالت کا فیصلہ سننے کے بعد ملزم با آسانی کمرہ عدالت سے نکلا اور فرارہونے میں کامیاب ہو گیا تاہم اسے کسی پولیس اہلکار کی جانب سے بھی روکا یا گرفتار نہیں کیا گیا ۔





Source link