17

وردی پہنا کر ہم سے برتن دھلوائے جاتے ہیں اور کچن میں کام کرنے کے بعد ہمیں ۔۔۔۔ وزیر اعظم عمران خان کو یہ شکایت کس افسر نے کس بڑے کے خلاف کر دی ؟


اسلام آباد (ویب ڈیسک ) وزیراعظم عمران خان نے شہریوں کے مسائل براہ راست سننے اور ان کے فوری حل کے لیے پاکستان سیٹیزن پورٹل کا افتتاح کیا تھا تاکہ شہری کسی بھی حوالے سے شکایات براہ راست وزیراعظم ہاؤس تک پہنچا سکیں۔ لیکن حال ہی میں پاکستان سیٹیزن پورٹل میں ایک انوکھی درخواست آئی۔

درخواست میں کسٹم اہلکار کی جانب سے اپنے اعلیٰ افسران کے خلاف وزیراعظم کو شکایت لگائی گئی۔کسٹم اہلکار کا کہنا تھا کہ حکومت نے کروڑوں روپے لگا کر انہیں ٹریننگ کروائی، ہم یہ خواہش لے کر محکمہ میں داخل ہوئے کہ ہم ملک کے لیے کچھ کریں گے لیکن ہمیں چائے بنانے کے کام پر لگا دیا گیا ہے۔ ہم نے سوچا تھا کہ ہم ملک کے لیے کچھ کریں گے لیکن اعلیٰ افسران ہم سے برتن دھلواتے ہیں۔گریڈ 21 کے افسر کے ساتھ 5 اہلکار ان کی ذاتی خدمات کے لیے ہیں۔کسٹم اہلکار نے شکایت کی کہ ہم وردی پہن کر برتن دھوتے ہیں اور کچن کے کام کرتے ہیں۔ کسٹم اہلکار نے مزید کہا کہ وردی پہن کر کچن کے کام کرنے میں ہمیں شرمندگی محسوس ہوتی ہے لہٰذا وزیراعظم عمران خان سے درخواست ہے کہ وہ اس طرح کے سلوک کے خلاف ایکشن لیں۔یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے عوام سے براہ راست رابطے کے لیے قائم کیے جانے والا سٹیزن پورٹل افتتاح کے چند دنوں بعد ہی عوام کی شکایات سے بھر گیا تھا۔پہلے 24 روز میں ایک لاکھ سے زیادہ شکایات موصول ہوئیں جن میں سے سولہ ہزار سات سو ستر شکایات کا ازالہ کیا گیا۔ خیال رہے کہ گذشتہ برس اکتوبر میں وزیراعظم عمران خان نے ’’پاکستان سیٹیزن پورٹل‘‘ کا افتتاح کیا جس کی بدولت پاکستانی عوام براہ راست اپنی شکایات و تجاویز وزیر اعظم آفس کو بھجواتے ہیں۔ متعلقہ محکموں سے عوامی شکایات کا ازالہ کروانے اور قابل عمل تجاویز پر غور کے عمل کی نگرانی وزیر اعظم آفس سے ہی کی جاتی ہے جبکہ پاکستان سیٹیزن پورٹل کی بدولت لوگ اپنے موبائل فونز میں مخصوص ایپلی کیشن کے ذریعے حکومتی اداروں تک اپنی آواز پہنچاتے ہیں۔وزیراعظم سٹیزن پورٹل کی 2 ماہ کی کارکردگی رپورٹ کے مطابق پورٹل کے ذریعے پہلے دو ماہ کت دوران مجموعی طور پر ایک لاکھ 72 ہزار 109 شکایات درج کروائی گئیں۔جن میں سے 59 ہزار 632 شکایات کوحل کیا گیا تھا۔





Source link