28

شہید ہونے والے مسلمانوں میں کتنے بھارتی شہری شامل ہیں ؟ ناقابل یقین خبر – Hassan Nisar Official Urdu News Website


کرائسٹ چرچ (ویب ڈیسک )نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ کی مساجد میں دہشتگرد نےسفاکانہ اندازمیں اندھا دھند فائرنگ کر کے 50 نمازیوں کو شہید کر دیا جس میں 9 پاکستانی شہری بھی شامل ہیں میڈیا کی رپورٹ کے مطابق جمعہ کے روز ہونے والے اس دہشتگرد حملے میں شہید ہونے والوں میں دو

بھارتی شہری بھی شامل ہیں جبکہ ایک بھارتی شہری کی حالت تشویشناک ہے جس کا علاج جاری ہے ۔ نیوزی لینڈ کی سیکیورٹی فورسز نے تین حملہ آوروں کو گرفتار کر لیا ہے اور وزیراعظم جسیندا آرڈن نے اسے ملک کا تاریک دن قرار دیا ہے ۔بھارتی میڈیا کا کہناہے کہ ابھی تک 9 بھارتی شہری لاپتہ جن کی تلاش جاری ہے تاہم ابھی تک ان کے حوالے سے کوئی معلومات سامنے نہیں آ سکی ہیں ۔ نیوزی لینڈمیں جمعہ کی ادائیگی کے دوران دہشتگردوں کی جانب سے مساجد میں مسلمان مردوخواتین اوربچوں کے قتل نے یورپ اوراقوام مغرب کی درندگی کو بے نقاب کیاگیا ہے۔ ا س سانحہ پرپوری دنیا کے مسلمانوں کے دل زخمی اوررنجیدہ ہیں۔یہ واقعہ محض ایک جنونی شخص کا نہیں بلکہ مکمل پلاننگ معلوم ہوتاہے جس میں مسلم دشمن عالمی ٹرائیکا کا ہاتھ خارج ازامکان نہیں ، 17منٹ تک قتل عام بر اہ راست سوشل میڈیا پردکھایا جاتا رہااورا س نے 50انسانوں کی جان لے لی ۔دہشتگردی پراپنے ردعمل میں امیرصوبہ نے کہاکہ اس سے قبل بھی مسلمانوں کے خلاف یورپ کا متعصبانہ رویہ رہا ہے اوریہ پہلا واقعہ نہیں ۔ اگریہ درندگی کسی مسلمان جنونی نے کی ہوتی توآج پوری دنیا کا میڈیا،نام نہاد انسانی حقوق کی تنظیمیں اورعالمی برادری پوری امت مسلمہ کوکٹہرے میں کھڑا کردیتی لیکن چونکہ یہ درندہ غیر مسلم ہے اس لیے اس کا یہ فعل ذاتی قراردے کراس کی شدت کوکم کیا جارہا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق نیوزی لینڈکی وزیراعظم جسینڈا آرڈرن نے کرائسٹ چرچ واقعے میں مرنے ہونے والے شہداء سے اظہاریکجہتی کے لیے ویلنگٹن کی مسجد کے باہر پھول رکھے اور سیاہ لباس اور دوپٹا اوڑھ کر لواحقین سے اظہار ہمدردی کیا۔





Source link