9

عمران خان کے بچے کھرب پتی ، خود وہ 300 کنال کے گھر میں رہتے ہیں اور ۔۔۔۔۔ گلوکار جواد احمد نے وزیراعظم پاکستان پر اب تک کا سب سے بڑا الزام عائد کر دیا


لاہور(ویب ڈیسک) چیئرمین برابری پارٹی پاکستان جواد احمد نے کہا ہے پاکستان اس وقت تک نہیں بدلے گا جب تک 99فی صد لوگ ایک فی صد کے سامنے کھڑے ہوکر الیکشن نہیں لڑیں گے اور اسمبلی میں جاکر اپنے لئے قانون سازی نہیں کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ میوزک کی فیلڈ میں

آیا ہی اس لئے تھا کہ سیاست میں حصہ لے سکوں اور لوگوں تک پہنچ سکوں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے نوائے وقت کے ساتھ خصوصی گفتگو میں کیا۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اس ملک کا اصل مسئلہ یہ ہے کہ غریب کا کوئی پرسان حال نہیں۔ عمران خان کے بچے کھرب پتی ہیں اور لندن میں رہتے ہیں اور خود وہ 300 کنال کے گھر میں رہتے ہیں۔ یہ کس قسم کی ریاست مدینہ بنا رہے ہیں کہ خود تو 300 کنال گھر میں رہ رہے ہیں اور مزدور کو ماہانہ 15000 روپے تنخواہ اس پر بھی عملدرآمد نہیں ہوتا۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ میں وزیراعظم نہیں بننا چاہتا میری خواہش ہے کہ جب ہم اقتدار میں آئیں تو کوئی نوجوان وزیراعظم ہو۔ ہم اس ملک میں اقتدار میں آئیں گے تو تعلیم اور صحت کیلئے ایمرجنسی لاگو کریں گے۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق پاکستان مسلم لیگ( ن) کے صدر شہبازشریف نے کہا ہے کہ نوازشریف کوعلاج کی سہولت نہ دینا حکومت کی سنگین غفلت ہے، اگر نوازشریف کوکچھ ہوا تو ذمے دارعمران خان اورحکومت ہوگی،10سال میں سرکارکا ایک دھیلہ بھی استعمال نہیں کیا،میں نے سرکاری مراعات لیں نہ سرکاری دورے کیے،خرچہ خود اٹھایا،علاج بھی اپنے پیسے سے کرایا۔لاہور میں احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ نوازشریف کی 5 سال قبل اوپن ہارٹ سرجری ہوچکی ہے، اس کے علاوہ وہ بلڈ پریشر اور ذیابیطس کے مریض بھی ہیں۔ جیل میں ان کی طبیعت ٹھیک نہیں، حکومت نواز شریف کی صحت کے معاملے کو سنجیدگی سے نہیں لے رہی اور حکومت بدترین غفلت کا مظاہرہ کررہی ہے۔اگر نوازشریف کو کچھ ہوا تو تمام ذمہ داری عمران خان نیازی پر ہوگی۔(ش س م)





Source link