21

1 نہیں ،5 نہیں اور 7 بھی نہیں۔۔۔۔ نواز شریف دراصل کتنی بیماریوں میں مبتلا ہیں اور یہ کون کونسی ہیں؟ حامد میر نے ایسی خبر بریک کر دی کہ وزیر اعظم عمران خان کا دل بھی پسیج جائے گا


لاہور (نیوز ڈیسک) معروف صحافی حامد میر کا کہنا ہے کہ نواز شریف کو چار خطرناک بیماریاں لاحق ہیں۔نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ حکومتی ڈاکٹرز کے مطابق نواز شریف کو نو سے دس بیماریوں میں مبتلاہیں جن میں سے چار بیماریاں انتہائی خطرناک ہیں۔

حامد میر نے مزید کہا کہ میڈیکل بورڈ نے حکومت کو یہ تجویز دی تھی کہ نواز شریف کو ایسی جگہ رکھا جائے جہاں ان کی 24 گھنٹے نگہداشت ہو سکے۔جب کہ بلاول بھٹو کی نواز شریف سے ملاقات کے بعد حکومت کے رویے میں مثبت تبدیلی دیکھنے میں آئی ہے۔وزیر اطلاعات نے کہا ہے کہ حکومت نواز شریف کا بہترین علاج کرائے گی۔آج بلاول بھٹو نے نواز شریف کے موقف کا دفاع کیا ہے مسلم لیگ ن کے موقف کا نہیں۔واضح رہے گذشتہ روز پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمینبلاول بھٹو ن لیگ کے تاحیات قائد نواز شریف سے ملاقات کرنے کے لیے کوٹ لکھپت جیل پہنچے۔پاکستان پیپلز پارٹی کے دیگر رہنما بھی بلاول بھٹو کے ہمراہ تھے۔نواز شریف اور بلاول بھٹو کے مابین طویل ملاقات ہوئی۔نواز شریف نے بلاول بھٹو اور ان کے ہمراہ آئے وفد کا عیادت کرنے پر شکریہ ادا کیا۔ دونوں کے درمیان سیاسی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال ہوا۔سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے والد سے ملاقات کرنے کے لیے پر پیپلز پارٹی چئیرمین بلاول بھٹو کا اشکریہ ادا کیا تھا۔دوران ملاقات نواز شریف نے کہا کہ حکومت کچھ بھی کرلے جیل مجھے نہیں توڑ سکتی،یہ لوگ میرا علاج کرائیں تماشا تو نہ بنائیں، مجھے ہسپتال لے جایا جاتا ہے ،بلڈ پریشر اور بلڈ ٹیسٹ کروا کر واپس جیل لے آتے ہیں ۔بلاول بھٹو زرداری نے نواز شریف سے کہا کہ میاں صاحب آپ تین بار کے وزیر اعظم ہیں یہ زیادہ دیر آپ کو بند نہیں رکھ سکتے، امید ہے اگلی ملاقات جیلسے باہر ہوگی۔جس پر نواز شریف نے ہنس کر جواب دیا کہ یہ بھی کہہ دیں یہ ملاقات جلد سے جلد ہو۔





Source link