16

زبیر محمود کا (ن) لیگ کو سرپرائز۔۔۔۔ پارٹی اجلاس میں کیوں نہیں بلایا؟ بڑا قدم اُٹھا لیا


لاہور(نیوز ڈیسک ) کچھ روز قبل مسلم لیگ ن کی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس کی صدارت شہباز شریف نے کی ، اس میٹنگ کے بعد افواہیں گردش کرنا شروع ہوئیں کہ مسلم لیگ ن ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوچکی ہے، جس کی لیگی رہنماؤں کی جانب سے تردید بھی کی گئی


تاہم اب پرویز رشید بھی میدان میں آگئے ہیں اور انہوں نے پارٹی اختلافات کی تصدیق کر دی ہے، نجی ٹی وی چینل دنیا نیوز نے دعویٰ کیا ہے کہ پرویز رشید نے اس حوالے سے کہا کہ انہیں علم ہی نہیں تھا کہ پارٹی کی کوئی میٹنگ یا اجلاس تھا، نہ مجھے مدعو کیا گیا تھا، نجی ٹی وی چینل نے دعویٰ کیا ہے کہ پارٹی اجلاس میں پرویز رشید کے علاوہ راجہ ظفر الحق، جاوید لطیف اور محمد زبیر بھی شریک نہیں تھے۔ دوسری جانب ن لیگ کے ہی سینئر رہنماء زبیر محمود بھی میدان میں آگئے اور خود کو اجلاس میں مدعو نہ کیے جانے پر واضھ اعلان کر دیا ہے ۔ اس حوالے سے زبیر محمود کا کہنا تھا کہ یہ پارٹی کا اندرونی معاملہ ہے، مجھے پارٹی کی جانب سے کیوں نہیں بلایا گیا یہ انکا اپنا معاملہ ہے، میں اس پر تبصرہ ہی نہیں کرونگا۔ اس سے قبل احسن اقبال کا کہنا ہے کہ یہ تاثر دینے کی کوشش کی جارہی ہے کہ ن لیگ ٹوٹ چکی ہے یا پھر تقسیم ہوگئی ہے جو کہ سراسر غلط ہے، اگر حکومت چاہتی ہے کہ انکے ساتھ مذاکرات کیے جائیں تو پھر عمران خان مستعفی ہوجائیں اور ملک بھر میں نئے انتخابات کرائے جائیں تب ہی مذاکرات ممکن ہونگے، پورے ملک میں ن لیگ متحد ہے اور اسکی قیادت صرف نواز شریف کر رہے ہیں، پوری اپوزیشن مولانا فضل الرحمان کے ساتھ ہے اور آزادی مارچ میں شرکت کرنے کے لیے تیار ہے، تمام حکومتوں کا ایک ہی مطالبہ ہے کہ حکومت روانہ ہوجائے۔ اب عمران خان کو چاہیئے کہ وہ خود ہی اگلے سال میں نئے انتخابات کا اعلان کریں تاکہ ملک کو بحرانوں سے نکالا جاسکے، جو نعرہ نواز شریف نے لگایا تھا وہ اب قومی نعرے کی شکل اختیار کر چکا ہے، وہ نواز شریف ہی تھا جس نے ملک کو اندھیروں سے نکال کر روشنیوں کی راہوں پر گامزن کیا، پاکستانی معیشت میں جان ڈالی، پاکستان کو سی پیک جیسا عظیم الشان منصوبہ دیا، صرف دھاندلی سے ہی ن لیگ کو ہرایا جاسکتا تھا ویسے ن لیگ کو شکست دینا ممکن ہی نہیں تھا ۔ اگر عمران خان پاکستان پر ایک سال مزید حکومت کر گئے تو پاکستانی معیشت کا بیڑا غرق جبکہ ملک مزید پیچھے چلا جائے گا، اس وقت جب ملک کو اتحاد اور ینگاگت کی ضرورت ہے نا اہل حکومت انتقامی سیاست پر تلی ہوئی ہے اور پورے ملک کو پیچھے کرتی جا رہی ہے۔









Source link