35

سعودی عرب میں سیاحت کا فروغ، صرف دس دن میں 24 ہزار سیاحوں کی آمد


ریاض: سعودی حکام کی جانب سے سیاحت کے فروغ کے لیے اقدامات کیے جارہے ہیں، سیاحتی ویزا جاری کرنے کے بعد صرف دس دن میں 24 ہزار سیاح سعودی عرب پہنچے۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب میں تیل کے علاوہ دیگر شعبوں سے منافع حاصل کرنے کے لیے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان تاریخی فیصلے کررہے ہیں، غیرملکی سیاحوں کو ویزا دینا اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ 27 ستمبر کو سعودی حکام نے سیاحتی ویزا پالیسی کا اعلان کیا تھا، جس کے بعد چوبیس ہزار غیر ملکی سیاحوں نے سعودی عرب کی سرزمین پر قدم رکھا۔

اس سے قبل سعودی حکام صرف حج اور عمرہ زائرین، غیر ملکی سفارتی معاملات کے لیے افسران کو ویزا فراہم کرتے تھے، لیکن اب سیاحت کے لیے بھی سعودی عرب کے دروازے کھل گئے۔

سعودی حکومت نے وژن 2030 کے تحت غیرشادی شدہ جوڑوں کو ہوٹل کا کمرہ بک کرنے کی بھی اجازت دے دی ہے، جس کے بعد غیر ملکی سیاح اپنی مرضی سے رہائش بھی اختیار کرسکیں گے۔

خیال رہے کہ سیاحوں کو ویزا کے حصول سے قبل دستخطی عہد نامے پر عمل کرنا لازمی ہوگا، ان میں سے سب سے اہم بات کی توثیق کرنا یہ ہے کہ درخواست میں دستاویزی معلومات درست ہیں، تمام سعودی قوانین و ضوابط کی پابندی کریں اور اپنے لوگوں کےاسلامی رسم و رواج کا احترام کریں۔

سعودی عرب: خواتین کو ہوٹلوں میں تنہا رکنے کی اجازت مل گئی

کسی بھی طرح کی خلاف ورزی کی صورت میں حکام کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ زائرین کو سعودیہ میں داخل ہونے سے روک کر وہاں سے آنے والے کو واپس اس کے ملک بھیج دے۔

توقع ہے کہ2020 کی پہلی سہ ماہی میں ویزا سے فائدہ اٹھانے والے ممالک کی تعداد میں اضافہ ہوگا جبکہ موجودہ ممالک میں سے کچھ امریکہ، کینیڈا، برطانیہ، نیوزی لینڈ، جنوبی کوریا، اٹلی ، آئس لینڈ، فرانس، ناروے، اسپین، یونان، نیدرلینڈز، رومانیہ، کروشیا اور سویڈن، ڈنمارک، ایسٹونیا، فن لینڈ، سنگاپور، ملائشیا، قازقستان، روس، آسٹریا، بیلجیم، پولینڈ، چین، ہانگ کانگ، جنوبی کوریا اور بلغاریہ مستفید ہوں۔

Comments

comments





Source link