24

فیفا کی تنبیہ، 40 سال بعد ایرانی خواتین کو اسٹیڈیم میں میچ دیکھنے کی اجازت مل گئی


تہران: فٹبال کی عالمی تنظیم فیفا کی تنبیہ کے بعد ایرانی حکام نے خواتین کو چالیس سال بعد اسٹیڈیم میں جاکر میچ دیکھنے کی اجازت دے دی۔

تفصیلات کے مطابق فیفا نے گزشتہ ماہ ایران کو خبردار کیا تھا کہ اگر خواتین کو اسٹیڈیم تک رسائی نہ دی گئی تو ایران کی رکنیت ختم کردی جائے گی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ورلڈکپ 2022 کا کوالیفائر میچ ایران اور کمبوڈیا کے درمیان ملکی دارالحکومت تہران کے آزادی اسٹیڈیم میں کھیلا جارہا ہے۔

ریاستی میڈیا کا کہنا ہے کہ اس اعلان کے بعد ٹکٹوں کی فروخت میں بھی اضافہ ہوا، پہلے مرحلے کی تمام ٹکٹیں ایک گھنٹے میں ہی فروخت ہوگئیں جبکہ شہریوں کی طلب دیکھتے ہوئے نشستوں میں مزید اضافہ کیا گیا ہے۔

مقامی خاتون صحافی کے مطابق اب تک 3500 ٹکٹیں خواتین خرید چکی ہیں، جبکہ کئی عورتین دور دراز علاقوں تک سفر کررہی ہیں کہ متعلقہ جگہوں سے ٹکٹ حاصل کرسکیں۔

ان کا کہنا تھا کہ مجھے یقین نہیں آرہا کہ اب خواتین باآسانی میدان میں جاکر فٹبال میچ دیکھا کریں گی، اب تک ہم ٹی وی یا ریڈیو پر کومنٹری سنا کرتے تھے۔

خیال رہے کہ خواتین کو اسٹیڈیم میں میچ دیکھنے کی اجازت ملنے کے بعد خواتین سیکیورٹی اہکار بھی میدان میں اپنے فرائض انجام دیں گی۔

اس اعلان کے بعد ایران میں مذہبی حلقوں کی جانب سے شدید تنقید کی جارہی ہے، ان کے مطابق فٹبال میچ میں کھلاڑی مختصر لباس پہنتے ہیں جسے خواتین کا دیکھنا جائز نہیں ہے۔

Comments

comments





Source link