15

مولانا فضل الرحمان کا احتجاج ان کا اپنا فیصلہ ہے، اخلاقی حمایت جاری رکھیں گے، بلاول بھٹو


جامشورو : بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کا اسلام آباد احتجاج کا فیصلہ ان کا اپنا ہے، چاہے کسی کا بھی دھرنا رہا ہو ہم خود شریک نہیں رہے، مولانا صاحب کے دھرنے میں ہماری مورل سپورٹ ہوگی۔

ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین نے جامشورو میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ وفاق صوبہ سندھ کو پورا حصہ نہیں دیتا پھر ہماری غربت کا مذاق اڑاتے ہیں، آئینی حقوق اور وسائل دیں تاکہ عوامی مسائل حل ہوں۔

چیئرمین پی پی نے کہا کہ حکومت کراچی کے معاملے پر ڈرامے بازی کرتی ہے اور کمیٹی پر کمیٹی بنارہی ہے، پی ٹی آئی اور ان کے اتحادیوں کا الائنس تھا کہ کراچی کو سندھ سے الگ کردیں گے۔

یہ تو ہمیشہ سے سندھ کو توڑنے کی سوچ رکھتے ہیں، یہ حکومت ڈرامے بازی کرکے کمیٹی پر کمیٹی بنارہی ہے، ہم سمجھتے ہیں کہ سندھ کو آئینی حقوق اور وسائل فراہم کریں تاکہ عوامی مسائل حل ہو سکیں۔

جامشورو میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کی سیاست اور ایشوز کی اخلاقی اور سیاسی حمایت کرتے ہیں تاہم دھرنے سے متعلق پالیسی پاکستان پیپلزپارٹی کی ایک ہے۔

بلاول بھٹو کا مزید کہنا تھا کہ قائد اعظم نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ قرار دیا تھا، بھارت نے مقبوضہ کشمیر کو جیل میں بدل دیا، یہ تاریخی حملہ ہے۔

ذوالفقار بھٹو شہید نے کہا تھا کہ نیند میں بھی کشمیر پر غلطی نہیں کرسکتا، کشمیری عوام کی جدوجہد بارآور ہونے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے، مسئلہ کشمیر پر حکومت کی نااہلی برداشت نہیں کرسکتے اور نہ اس معاملے پر کوئی بھی پاکستانی کسی قسم کی کوتاہی برداشت کرے گا۔

 

Comments

comments





Source link