8

مقتول خلیل کے بھائی اور بچوں کے حوالے سے ناقابل یقین خبر آ گئی – Hassan Nisar Official Urdu News Website


لاہور(ویب ڈیسک) دباؤیا وجہ کچھ اور؟ ویڈیو موجود ہونے کے باوجود سانحہ ساہیوال میں جاں بحق ہونے والے مقتول خلیل کے بھائی اور بچوں نے ملزمان کو شناخت کرنے سے انکار کردیا۔لاہور کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں سانحہ ساہیوال کیس کی سماعت ہوئی جس دوران مقدمے کے ملزمان صفدر، احسن، رمضان، سیف اللہ، حسنین


اور ناصر نواز کو پیش کیا گیا۔مقتول ذیشان کے بھائی احتشام نے عدالت کے روبرو اپنا بیان ریکارڈ کرایا۔واقعے کی ویڈیو موجود ہونے کے باجود، مقتول خلیل کے بچوں عمیر اور منیبہ، بھائی جلیل نے بھی بیان ریکارڈ کروادیا جب کہ مقتول خلیل کے بچوں اور بھائی نے ملزمان کو شناخت نہ کرسکنے کا بیان دے دیا۔عمیر اور منیبہ کا کہنا تھا کہ وہ گولی چلانے والے اہلکاروں کی شناخت نہیں کرسکتے، مقتول کے بھائی جلیل نے بیان دیا کہ وہ موقع پر موجود نہیں تھا۔عدالت نے مزید گواہان کو شہادتوں کے لیے طلب کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 13 ستمبر تک ملتوی کردی۔ اور ناصر نواز کو پیش کیا گیا۔مقتول ذیشان کے بھائی احتشام نے عدالت کے روبرو اپنا بیان ریکارڈ کرایا۔واقعے کی ویڈیو موجود ہونے کے باجود، مقتول خلیل کے بچوں عمیر اور منیبہ، بھائی جلیل نے بھی بیان ریکارڈ کروادیا جب کہ مقتول خلیل کے بچوں اور بھائی نے ملزمان کو شناخت نہ کرسکنے کا بیان دے دیا۔عمیر اور منیبہ کا کہنا تھا کہ وہ گولی چلانے والے اہلکاروں کی شناخت نہیں کرسکتے، مقتول کے بھائی جلیل نے بیان دیا کہ وہ موقع پر موجود نہیں تھا۔عدالت نے مزید گواہان کو شہادتوں کے لیے طلب کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 13 ستمبر تک ملتوی کردی۔ اور ناصر نواز کو پیش کیا گیا۔مقتول ذیشان کے بھائی احتشام نے عدالت کے روبرو اپنا بیان ریکارڈ کرایا۔واقعے کی ویڈیو موجود ہونے کے باجود، مقتول خلیل کے بچوں عمیر اور منیبہ، بھائی جلیل نے بھی بیان ریکارڈ کروادیا جب کہ مقتول خلیل کے بچوں اور بھائی نے ملزمان کو شناخت نہ کرسکنے کا بیان دے دیا۔عمیر اور منیبہ کا کہنا تھا کہ وہ گولی چلانے والے اہلکاروں کی شناخت نہیں کرسکتے، مقتول کے بھائی جلیل نے بیان دیا کہ وہ موقع پر موجود نہیں تھا۔عدالت نے مزید گواہان کو شہادتوں کے لیے طلب کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 13 ستمبر تک ملتوی کردی۔









Source link