7

کرنٹ سے ہلاکتیں، کے الیکٹرک کے خلاف پانچواں مقدمہ درج –


کراچی: شہر قائد کے علاقے نارتھ ناظم آباد میں حالیہ بارش کے دوران کرنٹ سے جاں بحق ہونے والے نوجوان کے والد نے کے الیکٹرک کے خلاف شاہراہ نورجہاں تھانے میں مقدمہ درج کرادیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں ہونے والے حالیہ مون سون بارشوں کے دوران کرنٹ لگنے سے ہونے والی ہلاکتوں کے خلاف کے الیکٹرک کے خلاف مقدمات درج ہونے کا سلسلہ جاری ہے اور اب تک مختلف تھانوں میں پانچ ایف آئی آر درج کی جاچکی ہیں۔

نارتھ ناظم آباد میں کرنٹ سے جاں بحق ہونے والے نوجوان کے والد نے شاہراہ نورجہاں تھانے میں کے الیکٹرک کے خلاف قتل بالسبب کی دفعہ کے تحت مقدمہ درج کرایا۔ شہر بھر کے مختلف تھانوں میں پانچ مقدمات درج ہونے کے باوجود پولیس کی جانب سے تاحال کوئی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی۔

مزید پڑھیں: کرنٹ لگنے سے ہلاکتیں، کے الیکٹرک کے خلاف مقدمہ درج

یاد رہے کہ تیرہ اگست کو میئر کراچی متاثرہ خاندان کے ہمراہ کے الیکٹرک کی انتظامیہ کے خلاف مقدمہ درج کرانے درخشاں تھانے پہنچے تھے، چار گھنٹے کی طویل جدوجہد کے بعد پولیس نے  میئر کراچی اور مقتولین کے والدین کی درخواست پر سی ای او کے الیکٹرک، مالک عارف نقوی کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا۔

واضح رہے کہ کراچی میں ہونے والی حالیہ بارشوں میں 15 افراد کرنٹ لگنے کے باعث جاں بحق ہوچکے ہیں  جبکہ اس سے قبل ہونے والی بارشوں میں 31 اموات ہوئیں تھی جبکہ 9 قربانی کے جانور بھی کرنٹ لگنے سے مر گئے تھے، قبل ازیں اکتیس جولائی کو بھی شہر میں مون سون بارش کے دوران کرنٹ لگنے کے واقعات میں 5 بچوں سمیت 20 افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔

Comments

comments





Source link