16

سابق بھارتی فوجی نے بھی مودی سرکار کو آئینہ دکھا دیا –


نئی دہلی: مقبوضہ کشمیر میں زبردست احتجاج کے بعد مودی سرکار کے منہ پر ایک اور تمانچا پڑ گیا ہے، بھارت کا حقیقت پسند طبقہ حقایق سامنے لانے لگا۔

تفصیلات کے مطابق سابق بھارتی فوجی، مصنف اور صحافی نے نریندر مودی کے لیے چشم کشا ٹویٹ کر دیا ہے، کہا کہ خطے کے اہم ممالک مسئلہ کشمیر کا حل چاہتے ہیں۔

سابق بھارتی فوجی پراوین ساہنے نے ٹویٹ میں لکھا کہ روس اور چین اعتماد سازی نہیں بلکہ مسئلہ کشمیر کا حل چاہتے ہیں۔

انھوں نے کہا خطے کے اہم ممالک کی طرف سے کشمیر کے مسئلے کی طرف توجہ سے مودی حکومت کے لیے جلد مذاکرات کا آغاز کرنا ناگزیر ہو جائے گا۔

پراوین ساہنے نے اپنے ٹویٹ میں بھارتی فوج کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں پر بھی تنقید کی، انھوں نے کہا کہ بھارتی فوج آپریشنز کے علاوہ لڑنے کی صلاحیت نہیں رکھتی۔

یہ بھی پڑھیں:  مقبوضہ کشمیر: کرفیو کے باوجود ہزاروں افراد کا احتجاج، بھارتی فورس کی فائرنگ سے متعدد زخمی

سابق بھارتی فوجی نے لکھا ہم نے اپنی فوج کو دور جدید کی جنگ کے لیے ناکارہ بنا دیا ہے، دوسری طرف آج ایک دور جدید کی جنگ ہمارے چہرے کو گھور رہی ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز بھارت کے غیر قانونی اقدام کے خلاف مقبوضہ کشمیر میں‌ شدید احتجاج اور مظاہرے کیے گئے، برطانوی خبر رساں ادارے نے بھارتی دعوؤں کا پردہ چاک کرتے ہوئے واضح کیا کہ مقبوضہ کشمیر میں نماز جمعہ کے بعد بڑے پیمانے پر مظاہرے ہوئے۔

کشمیر کی خصوصی آئینی حیثیت ختم کرنے کے فیصلے کو کشمیریوں نے قبول نہیں کیا، مظاہروں سے بوکھلاہٹ‌ کی شکار بھارتی انتظامیہ نے نہتے شہریوں پر فائرنگ کی، جس سے متعدد افراد شدید زخمی ہوگئے، جن کی حالت تشویش ناک ہے۔

Comments

comments





Source link